شریف الحسن نقوی نہیں رہے

شریف الحسن نقوی
شریف الحسن نقوی

نئی دہلی، یکم نومبر: اردو اکادمی کے سابق وائس چیئرمین شریف الحسن نقوی کا آج انتقال ہوگیا۔ وہ کچھ دنوں سے کافی بیمار تھے۔ مرحوم کی تدفین جامعہ نگر قبرستان میں عمل میں آئی۔ ان کے جنازے کی نماز میں بڑی تعداد میں لوگوں نے شرکت کی۔

ان کے انتقال پر اظہار تعزیت کرتے ہوئے اکادمی کے اسسٹنٹ سکریٹری راغب الدین نے کہا کہ شریف الحسن نقوی کا انتقال اردو دنیا کا ایک بڑا نقصان ہے۔ انہوں نے کہا کہ نقوی صاحب ایک نہایت ہی ملنسار ، شریف الطبع اور بہترین انتظامی صلاحیتوں کے مالک تھے۔

راغب الدین نے کہا کہ مرحوم شریف الحسن نقوی غضب کے مردم شناس اور دور اندیش انسان تھے۔اردو کے فروغ میں نقوی صاحب کے رول کو یاد کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ اردو اکامی دہلی کے ذریعے شریف الحسن نقوی نے اردو کے فروغ کے لیے جو بنیادی ڈھانچہ تیار کیا تھا، آج بھی اسی پر عمل کیا جارہا ہے۔

(بیگم نقوی، شریف الحسن نقوی ، راغب الدین اور انیس اعظمی۔تصاویر: بشکریہ راغب الدین)
(بیگم نقوی، شریف الحسن نقوی ، راغب الدین اور انیس اعظمی۔تصاویر: بشکریہ راغب الدین)

شریف الحسن نقوی کے انتقال پر اردو اکادمی دہلی کے سابق سکریٹری انیس اعظمی نے گہرے دکھ کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ان کے جانے سے جو خلا ء پیدا ہوا ہے ، اس کاپورا ہونا مشکل ہے۔نیوز ان خبر ڈاٹ کام سے ٹیلی فون پر بات کرتے ہوئے انیس اعظمی نے کہا کہ انہیں اس بات کا بھی شدید غم ہے کہ وہ دہلی سے دور ممبئی میں ہیں ۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *