سیتامڑھی میں بس کے 30 فٹ گہری کھائی میں گرنے سے 14 افراد ہلاک ، گورنر اور وزیر اعلی کا اظہار افسوس

پٹنہ سے نورالسلام  ندوی کی رپورٹ ✍️

پل کی ریلنگ توڑ کر بس گری کھائی میں

پٹنہ۔۔۔بہار کے سیتا مڑھی میں آج شام چھ بجے مسافروں سے بھری بس سامنے سے آرہی ٹرک سے بچنے کی کوشش میں بے قابو ہوکر پل کی ریلنگ توڑ کر 30 فٹ نیچے کھائ میں پلٹ گئ۔جس میں 14 لوگوں کے مرنے کی اطلاع ہے۔جبکہ 38 مسافر زخمی بتائے جا رہے ہیں۔مرنے والوں کی تعداد میں اضافہ کا امکان ہے۔حادثہ کی اطلاع ملتے ہی ڈی ایم۔ایس پی۔ڈی ایس پی سمیت سارے سرکاری حکام جائے حادثہ پر پہنچ گئے ہیں۔حادثہ کے بعد مقامی لوگوں کی بھیڑ جمع ہوگئ۔لوگ بہت زیادہ غصہ میں تھے۔بے قابو بھیڑ کی وجہ کر راحت رسانی میں انتظامیہ کو مشقت اٹھانی پڑی۔ ڈی ایم ایس پی اور ڈی ایس پی نے لوگوں کو سمجھا بوجھا کر بھیڑ کو کنڑول کیا اور مقامی پولس اور انتظامیہ کی مدد سے راحت رسانی کا کام تیز کر دیا ہے۔اطلاع کے مطابق بس مظفرپور سے اورائ جارہی تھی۔بس پر کل 60 مسافر سوار تھے۔چندن ٹریولس کی بس BR06\9161مظفرپور سے اورائ جا رہی تھی کہ سیتامڑھی کے انی سید پور کے پاس لائن ہوٹل کے قریب این ایچ 77 پر حادثہ کا شکار ہوگئ اور پل کا ریلنگ توڑ کر 30 فٹ کھائ میں جا گری۔حادثہ کے بعد ڈرائیور اور بس کے دوسرے ملازم فرار بتائے جا رہے ہیں۔زخمیوں کا علاج مقامی اسپتال میں کرایا جا رہا ہے۔اس اندوہناک حادثہ پر گورنر ستیہ پال ملک ۔وزیر اعلی نتیش کمار۔سابق وزیر اعلی رابری دیوی۔نے گہرے افسوس کا اظہار کیا ہے۔اور مرنے والوں کے وارثین سے اظہار ہمدردی کیا ہے۔وزیراعلی نے سرکاری حکام کو ہدایت دی ہے زخمیوں کا فوری طور صحیح علاج کرایا جائے اور راحت رسانی میں کسی طرح کی سستی نہ برتی جائے۔وزیر اعلی نے مزید کہا کہ مرنے والوں کے واثین کو ہر طرح کی راحت پہچائ جائے گی اور انہیں سرکاری متعینہ رقم بھی دے گی۔حادثہ سے لوگ کافی ناراض ہیں۔اور پورے علاقہ میں غم واندوہ کی لہر دیکھی جا رہی ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *