دہشتگردی عالمی خطره ہے: ایرانی وزیر خارجہ

بنکاک، ۱۱ مارچ: ایران کے وزیرخارجه محمد جواد ظریف نے دہشتگردی کو عالمی خطرہ قرار دیتے ہوئے کہا کہ یہ سبھی ملکوں کے لیے خطرناک ہے۔ اسی کے ساتھ انہوں نے اس بات پر زور دیا که ایرانی قوم اپنے مذہبی عقائد کی بنیاد پرتشدد، دہشتگردی اور قتل و غارت کی قطعی طور سے مخالف کرتی ہے.

Jawwad Zarifایران کی سرکاری خبررساں ایجنسی ارنا کے مطابق جود ظریف نے ان خیالات کا اظہار جمعہ کے روز تھائی لینڈ کی راجدھانی بنکاک میں سفارتکاروں، دانشوروں اور ماہرین کی ایک خصوصی نشست سے خطاب کرتے ہوئے کیا.

اس نشست کے دوران ظریف نے جوہری معاہده، عالمی مشکلات کے حل اور انتہا پسندی سے نمٹنے کے حوالے سے اپنی بات کہی.

انہوں نے کہا که ایران دوسرے ملکوں کی طرح عالمی جوہری توانائی ایجنسی کے جوہری عدم توسیع کے معاہدے (این پی ٹی) کا رکن ہے لہذا اسے جوہری توانائی کو پرامن طور پر استعمال کرنے کا حق حاصل ہے.

ظریف نے مزید کہا که ایرانی جوہری سائنسدانوں کی اعلی کارکردگی سے گذشته سالوں کے دوران ملک میں سینٹری فیوجز کی تعداد ۲۰ هزار تک پہنچ گئی.

خطے کی موجوده صورتحال کا ذکر کرتے ہوئے انہوں نے کہا که تشدد اور انتہا پسندی کو ہرگز دین اور مذہب سے نہیں ملانا چاہیے. ایرانی قوم اپنے مذهبی عقائد کے تحت تشدد کی مخالفت کرتی ہے اور اس حوالے سے ہم شروع سے دہشتگردی اور انتہا پسندی کی مذمت کرتے آرہے ہیں.

داعش کی غیرانسانی کاروائیوں اور دہشتگردی کے خلاف مغرب کی بے نتیجه کارکردگی کا حواله دیتے ہوئے ایرانی وزیرخارجه نے اس بات پر زور دیا که داعش آج صرف شام کا مسئله نہیں ہے بلکه یه دہشتگرد تنظیم تمام ملکوں کے لیے خطره ہے.

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *