تیلگو زبان میں قرآن کے مترجم حمیداللہ شریف کا انتقال

Hamidulla Shariefگنٹور ،۱۰؍ اپریل (نامہ نگار) ریاست آندھرا پردیش کے ضلع گنٹور کے نوٹاکی گاؤں میں حمیداللہ شریف آج اپنے گھر پر انتقال کر گئے۔ وہ کئی دنوں سے علیل تھے۔ ان کی رحلت پر کئی اکابرین نے اپنے رنج وغم کا اظہار کرتے ہوئے اہل وعیال اور پسماندگان کو صبرکی تلقین دی اور مرحوم کے حق میں دعا کی۔ Divya Quran - Holy Quran
ریاست آندھرا پردیش میں کئی اصحاب علم نے قرآنِ شریف کا ترجمہ تیلگو زبان میں کیاہے۔ انہیں میں سے ایک تھے جناب حمیداللہ شریف۔ مرحوم عربی، فارسی، اردو، انگریزی اور تیلگوزبانوں میں ملکہ اور عبور رکھتے تھے۔ انہیں عربی، اردو اور تیلگو زبانوں کاا سکالر مانا جاتا تھا۔ انہوں نے قرآن شریف کا ترجمہ تیلگو زبان میں کیا جو ۱۹۸۵ ء میں ’’ دِویا قرآن‘‘ کے نام سے شائع ہوا تھا۔وہ جماعت اسلامی ہند ، ریاست آندھرا پردیش کے رکن اور مجلس شوری کے رکن بھی رہے۔

جناب حمیداللہ شریف انتہائی منکسر المزاج اور زندہ دل انسان تھے ۔وہ ہر خاص و عام سے انتہائی خندہ پیشانی سے پیش آتے تھے۔ ان کی خدمات قابل نا فراموش ہیں۔انہوں نے دینی اور سماجی شعبوں میں خاص طور سے نمایاں خدمات انجام دیں۔ ان کی کاوشوں سے ریاست آندھرا پردیش کے تیلگو بولنے والے مسلم طبقے کو دین اور قرآن سے اچھی آراستگی ہوئی۔ انہوں نے ملت کے کاموں میں سرگرم رہنے کے باوجو اپنے اسلامی ادب کی خدمت کے جذبے سے خود کو محروم نہیں رکھا ۔ان کی وفات پر قلبی دکھ کا اظہار کرتے ہوئے شری شیلم پراجکٹ کے ا سپیشل کلکٹر نورباشا رحمت اللہ، معروف مؤرخ سید نصیر احمداور شہر پنگنور کے اسلامیہ ایجوکیشنل اکیڈمی کے صدر پی ایوب خان نے خراج عقیدت پیش کیا اور مغفرت کی دعا کی۔ان کے انتقال کی وجہ سے اس علاقے میں ملت کے فلاحی کاموں کو ایک جھٹکا لگا ہے۔خراج عقیدت پیش کرنے والوں میں آندھرا پردیش مسلم انٹیلیکچوئل فورم کے سربراہ و ذمہ داران بھی تھے۔ ان کے لیے متعدد ادبی، سماجی، سرکاری، غیر سرکاری شخصیات نے نہایت غمزدہ ماحول میں ایصال ثواب کیا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *