ڈاکٹر انوارالحق کے انگریزی ناول ’دی لانگ ویٹ‘ کے اُڑیا ترجمہ کا اجراآج

نئی دہلی ،۲۹؍مارچ(پریس ریلیز)

Dr Anwarul Haqueڈاکٹر انوارالحق کے انگریزی ناول’دی لانگ ویٹ ‘ کا اڑیا زبان میں ترجمہ پکشی گھر پبلی کیشن ، بھونیشور سے شائع ہو کر منظر عام پر آ رہا ہے۔ ’پتھا بہو دورا‘ کے نام سے اس کتاب کا ترجمہ پرسانتا کمار پٹنائک نے کیا ہے۔ قرۃ العین حیدر کے غیر افسانوی ادب پرجامعہ ملیہ اسلامیہ نئی دہلی سے ریسرچ کے بعد اردو فکشن پر تنقید موصوف کا میدانِ عمل رہا ہے۔ ڈاکٹر انوارالحق کا ناول ’دی لانگ ویٹ‘ پینگوین کی انٹرنیشنل شاخ پارٹرج سے ۲۰۱۴ء میں جب شائع ہوا تو جامعہ اور اہالیانِ اردو نے ان کو بڑھ چڑھ کر مبارک باد پیش کی۔ اب ایک سال بعد جہاں ایک طرف ہند و پاک، سوئٹزر لینڈ، امریکہ، اریشس اور موزمبیق وغیرہ کے قارئین میں اس ناول کو مقبولیت حاصل ہوئی تو وہیں ہندوستان کی مختلف ریاستوں میں بھی قارئین نے اس ناول کو سرا ہا  ہے۔ اس کے اڑیا زبان میں ترجمہ ہو کر شائع ہونے سے دیگر زبانو ں کے قارئین میں اس کی مقبولیت کا اندازہ لگایا جا سکتا ہے۔ اس انگریزی ناول سے قبل اردو میں میں موصوف کی دو کتابیں’چاندنی بیگم: ایک جائزہ‘ اور ’قرۃ العین حیدر کی غیر افسانوی نثر‘شائع ہو کر اردو کے سنجیدہ قارئین میں مقبولیت حاصل کر چکی ہیں۔ ڈاکٹر انوارالحق آج کل شعبۂ اردو جامعہ ملیہ اسلامیہ سے بحیثیت گیسٹ فیکلٹی وابستہ ہیں۔
patha-bahu-dura-by-anwarul-haque-prasant-patnaik-for-mail-page-001 (1)ذاکر نگر میں انگریزی زبان سکھانے کا ایک ادارہ ڈائنامک انسٹی ٹیوٹ ہے جو امریکہ کے ماہرین زبان کے ذریعہ چلایا جا رہا ہے۔ اسی ادارے کے زیرِ اہتمام ’پتھا بہو دورا‘ کا اجرا ۲۹؍ مارچ ۲۰۱۶ کوساڑھے گیارہ بجے عمل میں آئے گا۔ اس موقع پر ایران سے تشریف لائے فارسی شاعر مبین تہرانی ، امریکہ سے مسٹر رینڈل لانگ،، لیبیا کی زاویہ یونیورسٹی کے شعبۂ کمپوٹر سائنس کی سابق صدر نہلہ احمد، سوئٹزر لینڈ سے انگریزی زبان کی استانی سیبل موغلی اور امریکہ سے ماہرِ تعلیم آرنی سوان کے علاوہ بھو نیشور سے معروف ادیب اجے سوائن، ساہتیہ اکادمی انعام یافتہ فکشن نگار ڈاکٹر اربند رائے اور پکشی گھر پبلی کیشن کے ڈائریکٹر بنوج تری پاٹھی اور اشوک سوائن ڈاکٹر انوارالحق کے ناول’ دی لانگ ویٹ‘ پر اظہارِ خیال فرمائیں گے۔ اس موقع پر اردو کی مختلف ادبی وعلمی شخصیات کی شرکت متوقع ہے۔
’دی لانگ ویٹ ‘کے اڑیا ترجمے کی اشاعت پر شعبۂ اردو جامعہ ملیہ اسلامیہ کے اساتذہ سمیت اردو کے معروف فکشن نگاروں نے ڈاکٹر انوارلحق کو مبارک باد پیش کی ہے۔
ّّ

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *