متھلانچل میں مدھم پڑرہی اُردو کی شمع کی لوکو مزید تیز کرنے میں نمایاں خدمات انجام دینگے نظرعالم : اشرف استھانوی


دربھنگہ….. (پریس ریلیز)    اُردو مشترکہ تہذیب کی زبان ہے، آزادی کی زبان ہے،انقلاب زندہ باد کا نعرہ دینے والی زبان ہے اور ریاست کی دوسری سرکاری زبان بھی ہے۔ اُردو والوں کی لاپرواہی اور سرکار کے سوتیلا رویہ کی وجہ سے محبت اور پیار کی یہ زبان ختم ہونے کے دہانے پر ہے۔ یہ باتیں عوامی اُردونفاذ کمیٹی بہار کے صدر اور سینئر صحافی اشرف استھانوی نے دربھنگہ کے لال باغ واقع آل انڈیا مسلم بیداری کارواں کے ریجنل دفتر میں پریس کانفرنس کو خطاب کرتے ہوئے کہی۔ مسٹراشرف استھانوی نے کہا کہ متھلانچل بڑی اُردو آبادی والا ضلع ہے لیکن عوامی اور سرکاری سطح پر اُردو کا نفاذ بہت ہی کم ہے جو فکر کی بات ہے۔انہوں نے مزید کہا کہ اُردو کو دوسری سرکاری زبان کا درجہ حاصل کئے 26 سال بیت گئے لیکن سرکاری سطح پر اُردو نفاذ کو یقینی بنایا نہیں جاسکا ہے۔انہوں نے اس موقع پر تمام جگہوں پر اُردو مترجم بحال نہیں کئے جانے اور اسسٹنٹ اُردو مترجم اور اُردو ٹائپ رائٹر کو نئی پوسٹ نہیں دئیے جانے وغیرہ پر بھی سوال اٹھائے اور حالیہ دنوں کچھ پوسٹوں کو منظوری دئیے جانے کی تعریف بھی کی۔انہوں نے کہا کہ بہار میں متھلانچل کا علاقہ اُردو اکثریت والا ہے لیکن خواندگی کی شرح دیگر اضلاع کے مقابلہ میں بہت کم ہے۔ انہوں نے کہا کہ بہار کے 78 ہزارپرائمری اور مڈل اسکول میں سے صرف 32 ہزار اسکولوں میں ہی اُردو اساتذہ ہیں۔ اس کے نتیجے میں اُردو طلبہ دوسری زبان پڑھنے پرمجبور ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اُردو جو ہماری آپ کی مادری زبان ہے اس سے ماں کی طرح محبت کریں۔ تبھی یہ زندہ رہ سکتی ہے۔ صرف سرکار کے بھروسے چھوڑ دینے سے یہ زندہ نہیں رہ سکتی ہے۔ انہوں نے لوگوں سے اپیل کی کہ وہ اپنے گھروں میں مختلف تقریبات کے کارڈ اُردو میں شائع کرائیں۔ اُردو میں بول چال اور لکھنے پڑھنے کا ماحول بنائیں، اپنے کاروبار کا بورڈ ہندی کے ساتھ ساتھ اُردو میں بھی لگوائیں۔ انہوں نے دربھنگہ کی عوام سے اپیل کی کہ وہ اُردو کی بیداری کے لئے آگے آئیں۔ وہیں اس پریس کانفرنس کے موقع پر عوامی اُردو نفاذکمیٹی کے صدر اشرف استھانوی نے آل انڈیا مسلم بیداری کارواں کے قومی صدرنظرعالم کی خدمات پر بولتے ہوئے کہا کہ نظرعالم وہ نوجوان ہے جو متھلانچل کے علاقے میں اقلیتوں اور محروم طبقوں کے مسائل کو بے باکی کے ساتھ اٹھاتے رہتے ہیں، نظرعالم کی انقلابی شخصیت ہے، ایماندار اور مخلص ہونے کے ساتھ ساتھ ملت کا درد ان کے اندر کوٹ کوٹ کر بھرا ہے، جس سے اہل بہار ہی نہیں ہندوستان بھر کے لوگ بخوبی واقف ہیں۔ سوشل میڈیا کے ذریعہ بھی نظرعالم صالح معاشرے کی تشکیل میں اہم کردار ادا کرتے رہتے ہیں۔ محبت کی زبان اُردو کے فروغ اور اس کی ترویج و ترقی کے بیش بہا خدمات کے پیش نظرلسانی تنظیم عوامی اُردو نفاذ کمیٹی بہار اُنہیں دربھنگہ کمشنری کا انچارج مقرر کرتی ہے اوران کی خدمت میں سند بھی پیش کیاگیا۔مسٹراشرف نے نظرعالم کو کمشنری کا انچارج مقرر کر اُمید ظاہر کی کہ متھلانچل کے علاقے میں مدھم پڑرہی اُردو کی شمع کی لوکو مزید تیز کرنے میں نمایاں خدمات انجام دیں گے ساتھ ہی اُردو کیلئے جنون کی حد تک عشق اور نیک جذبہ رکھنے والے سچے خادم پر مشتمل مختصر مگرفعال کمیٹی بھی تشکیل کرکے عوامی اور سرکاری سطح پر اُردو کے عملی نفاذ کے لئے عملی اقدامات کریں گے

۔ اس موقع پر جناب اسرارالحق لاڈلے، انصاف منچ کے ریاستی نائب صدرنیاز احمد، ڈاکٹر راحت علی(ترجمان)، پروفیسر شہزاد منظر(کیوٹی)، شاہ عماد الدین سرور(جنرل سکریٹری)، اندرکانت چودھری، محمدفیضی، محمدشبیر،راجا بھائی، محمداشرف علی،محمدزاہد حسین، ایڈوکیٹ صفی الرحمن راعین وغیرہ کثیرتعداد میں لوگ شامل ہوئے اور مبارکباد پیش کی۔اس موقع پر مسٹرنظرعالم اپنی پوری ٹیم کے ساتھ اشرف استھانوی صاحب کا پرزور طریقے سے متھلانچل کی سرزمین پر استقبال کیا اور آئندہ عید کے بعد دربھنگہ کی سرزمین پر اُردو بیداری کانفرنس و آل انڈیا مشاعرہ کے انعقاد کی بات بھی کہی اور کہا کہ جلد ہی اس پروگرام کے تاریخ کا اعلان بھی کیا جائے گا۔

Share

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *