وژن انٹــــرنیـــــشنل اسکول جیسے اداروں کا قیــام وقت کی اہم ضرورت ہے

سہرسہ،….. 23 جون (نورالسلام ندوی/منصورعالم عرفانی) وژن انٹرنیشنل اسکول سہرسہ کا قیام وقت کی اہم ضرورت ہے،حفظ قرآن کے ساتھ دینی تربیت اور اسلامی ماحول میں میٹرک تک کی تعلیم کا انتظام ایک خوش آئند قدم ہے۔یہ جام شریعت اور سندان عشق کا حسین امتزاج ہے۔ہمار نئ نسل کے ایک ہاتھ میں قرآن اور دوسرے ہاتھ میں کمپیوٹر ہو۔ہمیں اس فکر مندی کے ساتھ تعلیمی میدان میں آگے بڑھنا چائیے۔آج کے جو حالات ہیں اِن حالات میں مسلمان تعلیم اور ہنر سے ہی آگے بڑھ سکتے ہیں۔آپ تعلیم میں اس قدر ترقی کریں کہ ملک کی ضرورت بن جائیں،آپ کو کوئ نظر انداز نہیں کر سکتا ہےاور نہ ہی کوئ آپ کے حقوق کو سلب کرسکتا ہے۔ان خیالات کا اظہارہندوستان کےمشہورعالم دین اورسیاسی رہنماء مولانا اسرارالحق قاسمی(ایم پی کشن گنج)نے ویژن انٹر نیشنل اسکول سہرسہ کے افتتاح کے موقع پرکیا۔انہوں نے تعلیم کو ترقی کی شاہ کلید قرار دیتے ہوئے کہا کہ اسلام میں دینی اور دنیاوی تعلیم کی تفریق نہیں ہے۔اسلام میں علم نافع اور غیر علم نافع کی قید ہے۔انہوں عورتوں کی تعلیم پر بھی توجہ دینے کی درخواست کی اور کہا کہ ایک خاتون اگر تعلیم یافتہ ہوتی ہے تو پورا گھر تعلیم یافتہ اور مہذب ہوتا ہے۔انہوں ویژن انٹر نیشنل اسکول کے قیام پر اسکول کے منیجنگ ڈائرکٹرشاہنوازبدرقاسمی اور ڈائرکٹر نعیم صدیقی کو مبارکباد پیش کی. 

۔پروگرام کا آغازقاری برکت اللہ رحمانی کی تلاوت قرآن پاک سے ہوا۔جواں سال عالم دین اور صحافی مولانا نور السلام ندوی نے پروگرام کی نظامت کی انہوں نے افتتاحی تقریر میں سہرسہ اور کوسی علاقہ کی جغرافیائ،تعلیمی اور معاشی حالات پر روشنی ڈالتے ہوئے کہا کہ اس علاقہ کو ہر دور میں نظر انداز کیا گیا ہے جس کا نتیجہ ہے کہ یہ علاقہ تعلیمی اور اقتصادی لحاظ سے پسماندہ ہے۔انہوں نےکہا کہ ویژن انٹرنیشنل اسکول بہار میں ایک ماڈل ہے،یہ اپنی نوعیت کا منفرداور ممتاز ادارہ ہے جہاں حفظ قرآن کے ساتھ دینی ماحول اور اسلامی مزاج کے مطابق انگلش میڈیم دسویں تک عصری علوم کے حصول کا معیاری انتظام کیا گیا ہے۔اسکول کے منیجنگ ڈائرکٹر شاہنواز بدر قاسمی خطبہ استقبالیہ پیش کرتےہوے مہمانوں کا شکریہ ادا کیا اور اسکول کے اغراض ومقاصد پر روشنی ڈالی۔
اس موقع پر بہار اور بہار سے باہر کے کئ علماء، دانشور اور صحافی حضرات موجود تھے،مشہور ماہر تعلیم پروفیسر جواہر جھا نے اسکول کے قیام کو بہتر قدم بتاتے ہوئے کہا کہ آج طلبہ کی تعلیم پر محنت تو کی جاتی ہے لیکن ان کی تربیت پر بھرپور توجہ نہیں دی جاتی ہے۔انہوں طلبہ کی تربیت اور اخلاقی تعلیم کی طرف توجہ مبذول کرائی۔معروف سرجن اور آل انڈیامسلم پرسنل لاء بورڈکےرکن ڈاکٹر ابوالکلام نے کہا کہ اسکول کے افتتاح میں شرکت کر کے مجھے بےانتہا خوشی محسوس ہورہی ہے۔میں گرچہ بہت مصروف رہتا ہوں لیکن اس کی تعمیروترقی کے لئے جب بہی میری ضرورت ہوہمہ وقت حاضررہوں گا۔امارت شرعیہ پٹنہ سےتشریف لائےمفتی سعید الرحمن قاسمی نےاپنے تاثرات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ نئ نسل کی تعلیم وتربیت کے ساتھ ساتھ ان کے ایمان عقیدہ پرتوجہ دیجےاوران کو ایک اچھا مسلمان اور بہتر شہری بنانے کی فکر کیجئے تبھی یہ ممکن ہوگا جب ہم اپنے بچوں کو عصری علوم کے ساتھ کم از کم دین کی بنیادی تعلیم ضرور دیں۔انہوں نے کہا کہ یہ ایک ایسا ادارہ ہے جہاں آپ کے بچے دین کی تعلیم بھی حاصل کرسکتے ہیں اور دنیاوی تعلیم بھی۔قاری صہیب صدر راشٹریہ جنتادل یوتھ ونگ بہار نےاپنےخطاب میں کہاکہ یہ ادارہ ہم سب کی دل آوازہےآج ایسےہی تعلیمی اداروں کی ضرورت ہےجہاں دنیوی تعلیم کےساتھ دینی تعلیم کابہی نظم ہو،انہوں نےکہاکہ سہرسہ کی سرزمین پرقائم ہونےوالایہ منفردادارہ ایک تحریک کی شکل میں پورےبہارکےہرضلع میں قائم کرنےکی ضرورت ہےتاکہ ہمارےبچےبامقصدتعلیم حاصل کرسکیں_مولاناقمرانیس رئیس المبلغین امارت شرعیہ نے سہرسہ کی تعلیمی پسماندگی پر روشنی ڈالتے ہوئے کہا کہ یہاں کے ذمہ داروں اور سیاست دانوں نے تعلیم پر خاطر خواہ توجہ نہیں دی اس لئے یہاں کوئ معیاری تعلیمی ادارہ نہیں ہے۔انہوں نے کہا کہ حوصلوں کے ساتھ آگے بڑھئےاور کام کرنے والوں کو حوصلہ دیجئے_

ان کےعلاوہ مفتی جسیم الدین قاسمی مرکز المعارف ممبئ،مولانا عظیم اللہ صدیقی میڈیا انچارج جمعیتہ علماء ہنددہلی،جامعہ رحمانی مونگیرکےناظم تعلیمات مولانا عبد الدیان رحمانی،ظفر عالم ضلع صدر سہرسہ راجد،محی الدین رائن ضلع صدرجدیو یوتھ نے بھی خطاب کیا۔جبکہ اس موقع پر مشہورماہر تعلیم محمدراشدصاحب(چنئ)تازہ ترین ریڈیو نیوزسروس کے ایڈیٹرمنصور عالم عرفانی،نوجوان صحافی عارف اقبال،تنظیم ائمہ مساجد سہرسہ کےصدرحافظ ممتازرحمانی،بی جی پہ ایس کےڈاکٹرپرویزالرحمن،ڈاکٹرمحمدطارق،قاری اخترسیٹن آباد،مولاناشعیب رحمانی،مولاناسفیان احمد،مولانا عبد الباری قاسمی،مولانا آفتاب احمدندوی،ڈاکٹرلطف اللہ،معین الدین کی باوقار موجودگی رہی۔شہر اور اطراف کے لوگوں نے بڑی تعداد میں پروگرام میں شرکت کی۔مولانا اسرارالحق قاسمی کی دعا پر پروگرام کا اختتام ہوا،آخرمیں اسکول کےڈائرکٹرنعیم صدیقی نےتمام مہمانوں کاشکریہ اداکیا۔

Share

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *