ہم اپنے خون سے لکھتے ہیں ’بھارت ماتا کی جے‘: محمد عمران

Bharat Mata Ki Jai_Imran

میرٹھ، ۱۷ مارچ (پریس ریلیز): میرٹھ ضلع کانگریس کمیٹی کے نائب صدر محمد عمران نے آل انڈیا مجلس اتحاد المسلمین کے صدر اسدالدین اویسی کے اُس ملک مخالف بیان کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ ’’بھارت ماتا کی جے ہم اپنے خون سے لکھتے ہیں۔ ہم ہندوستانی ہیں، بھارت میں رہتے ہیں اور بھارت کی جے کرنا ہماری ذمہ داری ہے۔‘‘

محمد عمران نے فرقہ پرست طاقتوں کو اپنا جواب دیتے ہوئے اپنے خون سے ’’بھارت ماتا کی جے‘‘ لکھی۔ محمد عمران نے کہا کہ ’’کچھ لوگ اپنی سیاسی روٹیاں چمکانے کے لیے پوری اقلیتی برادری کو بدنام کرنے میں لگے ہوئے ہیں۔ اسلام سکھاتا ہے کہ اپنے ملک سے پیار کرو اور اس کے لیے ہنستے ہنستے اپنی جان دے دو۔ یہی ہمارے پُرکھوں نے بھارت کے لیے کیا ہے، اس لیے آج ہم سب ہندو۔مسلم بھارت ماتا کی جے اور جے ہند لکھتے ہیں۔ اسدالدین اویسی بھارت کو بانٹنے کی جو سیاست کر رہے ہیں، وہ ہندوستان کے عوام اور مسلمان برداشت نہیں کریں گے۔‘‘

انھوں نے مزید کہا کہ ’’اسدالدین اویسی اپنے پوسٹروں کے ساتھ بابا صاحب بھیم راؤ امبیڈکر جی کا پوسٹر لگاتے ہیں۔ میں پوچھنا چاہتا ہوں کہ کیا بابا صاحب بھیم راؤ امبیڈکر نے اسدالدین اویسی کو یہ سکھایا ہے کہ وہ بھارت کو بانٹنے کی سیاست کریں؟ میں حکومت ہند سے مطالبہ کرتا ہوں کہ اسدالدین اویسی کی پارلیمنٹ رکنیت کو فوری طور پر ردّ کیا جائے، تاکہ گندے لوگ پارلیمنٹ کے اندر ایسے الفاظ کا استعمال نہ کر سکیں اور ہندو۔مسلم اتحاد قائم رہ سکے۔‘‘

اس موقع پر ان کے ساتھ ریکن اہلووالیا، سردار منجیت سنگھ، حاجی سعید، پنڈت سشیل گوسوامی، حاجی شفیق، محمد نعیم، محمد عابد، حاجی عشرت سمیت سینکڑوں کانگریسی کارکن موجود تھے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *