حکومت بہار کے مسلم سرکاری ملازمین نہیں منا پائیں گے عید: نظرعالم

دربھنگہ… (پریس ریلیز) بہار میں موجودہ حکومت کے ذریعہ سرکاری ملازمین کو CFMS نئے طریقہ سے ٹریزری کے ذریعہ تنخواہ Pay کی ادائیگی کا حکم دیا گیا ہے۔ جب کہ اس طرح کے حکم پرکسی بھی معاملے کی ٹریننگ اسٹاف کو نہیں دلائی گئی ہے۔ سرکاری ملازمین اپنا بل (Bill) لیکر ٹریزری کا چکر کاٹ مایوس لوٹ رہے ہیں۔ مذکورہ باتیں آل انڈیا مسلم بیداری کارواں کے قومی صدرنظرعالم نے پریس بیان میں کہی۔ مسٹر عالم نے آگے کہا کہ یہ رمضان کا مہینہ ہے اور یہ بابرکت کامہینہ مسلمانوں کے لئے ایک خاص مہینہ ہوتا ہے۔ گھریلو زندگی میں روز مرہ کے دنوں سے زیادہ خرچ اس ماہِ مبارک رمضان کے مہینہ میں ہوتا ہے۔ مسلم سرکاری ملازمینوں کی حالت یہ ہوگئی ہے کہ گھروں میں رمضان کے مبارک مہینہ میں تنخواہ نہیں ملنے کی وجہ کر فاقہ کشی کی نوبت بنتی جارہی ہے یہی وجہ ہے کہ بڑی تعداد میں مسلم ملازمین کافی پریشان ہیں اور اُنہیں اب ایسا لگنے لگا ہے کہ اس بار اُن کے اہل خانہ کی عید نہیں ہوپائے گی۔ اس لئے وزیراعلیٰ سے یہ مطالبہ کرتے ہیں کہ ذاتی دلچسپی لے کر مئی مہینہ کا تنخواہPay پچھلے طریقہ سے ادا کرنے کا حکم دیں اور جون میں ٹریننگ دلا کر نئے طریقہ سے تنخواہ Pay کی ادائیگی کو جاری کریں تاکہ خاص طور پر مسلم ملازمین عید کا تہوار منا سکیں۔مسٹرنظرعالم نے مزید بتایا کہ اس معاملے کو لیکر ہماری تنظیم آل انڈیا مسلم بیداری کارواں نے وزیراعلیٰ نتیش کمار کو ایک مکتوب (مکتوب نمبر: 41/AIMBK/2018، تاریخ 31.05.2018) بھیجاہے جس کے ذریعہ حکومت سے یہ مطالبہ کیا گیا ہے کہ مسلم ملازمینوں کے اس مسئلہ کا حل فوراً اپنے سطح سے کریں تاکہ اقلیتوں کابہارحکومت پر یقین بنا رہ سکے اور مسلم ملازمین اپنے اپنے اہل خانہ کے ساتھ عیدجیسا بڑا تہوار خوشی کے ساتھ منا سکے۔

Share

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *